خواب نمبر18:حضرت محمد ﷺ کا پیغام امت مسلمہ کے نام

03 November 2018

5مارچ2017

میں اِس خواب میں اپنے آپ کو مسجد نبوی میں بیٹھے دیکھتا ہوں۔  میں بہت خوش ہوتا ہوں کہ میں ایک پرسکون اور پاک مسجد میں ہوں۔ پِھر حضرت محمدﷺ میرے سامنے آ کر بیٹھتے ہیں۔ آپﷺ کے ہاتھ میں چاربڑے سائز کے سونے کے کاغذ ہوتے ہیں۔

آپﷺ بڑے پرجوش انداز میں فرماتے ہیں ’’قاسم! میرا یہ پیغام ایک بار پِھرمیری امت تک پہنچا دو کہ جو تمہارا ساتھ  دے گا وہ ایسے ہی ہے جیسے اُس نے میرا ساتھ دیا اور وہ قیامت کے دن بھی میرے ساتھ ہو گا‘‘۔

’’قاسم! میرا یہ پیغام اُن لوگوں تک پہنچا دو جو میرے اِس کام میں تمھارے ساتھ ہیں، وہ یہ نہ سوچیں کہ اُن کا یہ کام نیکی میں شمار کیا بھی جا رہا ہے یا نہیں۔  قاسم! چاہے کوئی چھوٹا سا کام ہی کیوں نہ ہو، وہ یہ نہ سمجھیں کہ اِس کے کرنے کا کوئی فائدہ نہیں۔ قاسم! چاہے کوئی چھوٹی سی بھی کاوش کرے گا تو اللہﷻ اُسے ضائع نہیں کرے گا، بلکہ اللہﷻ اُن کے کاموں کو کئی گُنا بڑھا کر لکھتا ہے‘‘۔

’’یہ کوئی معمولی کام نہیں جو یہ لوگ کر رہے ہیں۔  وہ یہ نہ سوچیں کہ مجھے اُن کے ناموں اور کام کا نہیں پتا۔ اللہﷻ جن لوگوں کے نام اِن سونے كے کاغذوں پرلکھ رہا ہے، میں اُن کے نام پڑھتا رہتا ہوں اور جو کام وہ کرتے ہیں اللہﷻ مجھے اُن سے آگاہ کرتا رہتا ہے۔ اُن لوگوں کو چاہیئے کہ پریشان  نہ ہوں، وہ قیامت کے دن میرے ساتھ ہوں گے۔ اور جو سونے کے کاغذ اللہﷻ مجھے دیتا جا رہا ہے، میں انھیں اپنے پاس سنبھال کررکھ رہا ہوں۔ اِن کاغذوں پراُن لوگوں کے نام موجود ہیں جو مشکل وقت میں تمھارے ساتھ ہیں۔ قاسم! میرا سچا اسلام پوری دنیا میں اللہ ﷻ کی مدد سے پھیل کررہے گا۔  تم میرا یہ پیغام اُن لوگوں تک ضرور پہنچا دینا‘‘۔

میں حضرت محمد ﷺ کے سامنے کچھ نہیں بولتا صرف آپ ﷺ ہی بات کرتے ہیں۔ میرا دل چاہ رہا تھا کہ اُن کاغذوں پہ لکھے گئے نام پڑھ لوں مگرآپ ﷺ کے سامنے مجھے ایسا کرنے کی ہمت ہی نہیں ہوئی اورمیں بالکل خاموش اور ساکت بیٹھا رہا۔

Related Dream Videos

Tags: Qasim Qasim dreams


© 2021 - QasimDreams